Accessibility

Accessibility

Website Zoom

Color/Contrast

Download Reader

The National Assembly Session has been prorogued on Wednesday, the 10th July, 2024
Print Print

Speaker and Deputy Speaker NA extend felicitation to entire nation on Eid-ul-Adha, Eid-ul-Adha teaches us about selflessness, sacrifice and tolerance, says Speaker Ayaz Sadiq

Sunday, 16th June, 2024

Islamabad, June 16, 2024: Speaker National Assembly Sardar Ayaz Sadiq extended heartfelt greetings to the entire nation and the Muslim Ummah on the auspicious occasion of Eid-ul-Adha and stated, “Eid-ul-Adha teaches us about selflessness, sacrifice and tolerance.”

In his message on the eve of Eid-ul-Azha, the Speaker said, "Eid-ul-Adha is celebrated in honour of the absolute submission and unwavering obedience displayed by Prophet Ibrahim (AS) and Prophet Ismail (AS)”, he further added, “Eid-ul-Adha is the time to offer sacrifice and receive abundant rewards and blessings from Allah Almighty”

Furthermore, the Speaker prayed to Allah Almighty for blessing the nation with peace, prosperity, and happiness on this Eid. He also urged the Muslim Ummah and people of Pakistan to play their part in promotion of inter-faith harmony and peace.

Moreover, the Speaker while lamenting over the plight of the innocent Palestinian people, who continue to face atrocities, hardships and war crimes at the hands of the Israeli Occupation Forces stated, “Nearly 40,000 innocent Palestinians, including infants, women and elderly have been killed by Israeli Occupation Forces in Gaza and Rafah.” Consequently, Speaker NA reiterated Pakistan's resolve to extend unwavering support to Palestine in their rightful struggle for self-determination and strongly demanded for the end to the illegal occupation and blockade of Gaza.

In addition, Speaker also expressed profound grief over the Indian State aggression towards innocent children, women and men of Kashmir along with the immoral and unlawful abolition of a separate identity of the people of Kashmir. The Speaker stated, “Depriving the Kashmiri people of their identity is a grave violation of international law.” Speaker NA urged the entire nation and the Muslim Ummah to make special prayers for the freedom of the oppressed Muslims of Palestine and Kashmir on the occasion of Eid-ul-Adha.

Deputy Speaker National Assembly Syed Mir Ghulam Mustafa Shah also extended his warm greetings to the nation on the occasion of Eid-ul-Adha. While emphasizing the significance of Eid-ul-Azha he stated, "Eid-ul-Adha is celebrated to empathize with Prophet Ibrahim (AS) & Prophet Ismail (AS) as we offer sacrifice to demonstrate our submission towards Allah Almighty”. While expressing grief over the on-going atrocities in Palestine he stated, “Senseless massacre of innocent Palestinians from the past 9 months at the hands of Zionist forces is against the modern norms of the world.” Deputy Speaker also stated, “Parliament and people of Pakistan shall continue to raise their voice for Palestinians and Kashmiris on all regional & international forums.”

Deputy Speaker NA also stressed on the need to take heed from and adopt the exemplary spirit of self-sacrifice set by Prophet Ibrahim (AS) as only then we will excel and prosper as a country and a nation.


 

اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق اور ڈپٹی اسپیکر سید میر غلام مصطفیٰ شاہ کا عید الاضحی کے پر مسرت موقع پر پوری قوم، امت مسلمہ اور عازمین حج کو حج اور عید کی مبارکباد

 عید الاضحی ہمیں ایثار، قربانی، محبت اور رواداری کا درس دیتی ہے، اسپیکر قومی اسمبلی 

اسلام آباد 16 جون، 2024: اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے عید الاضحی کے موقع پر عازمین حج، پوری قوم اور امت مسلمہ کو حج اور عید الاضحی کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ عید الاضحی ہمیں ایثار، قربانی، محبت اور رواداری کا درس دیتی ہے۔ عید الضحی ہمیں حضرت ابراھیم علیہ السلام کی عظیم قربانی کی یاد دلاتی ہے جنہوں نے اللّه تعالیٰ کی رضا اور خوشنودی کی خاطر اپنے پیارے بیٹے حضرت اسماعیل علیہ السلام کو قربان کرنے کا ارادہ کیا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے عید الاضحی کے پر مسرت موقع پر اپنے پیغام  میں کیا جو پیر کے روز پورے ملک میں نہایت مذہبی جوش و جذبے سے منائی جا رہی ہے۔  

اسپیکر قومی اسمبلی نے کہا کہ حضرت ابراھیم علیہ السلام نے دین اسلام کی خاطر بڑی سے بڑی قربانی سے بھی دریغ نا کیا۔انہوں نے کہا کہ عیدالضحی کے موقع پر پوری قوم کو اس عزم کا اعادہ کرنا ہے کہ ہم ذاتی مفاد، اور دنیاوی لالچ کی بجائے محبت، ایثار اور رواداری سے سر شار ہو کر اپنے ارد گرد کے ضرورت مندوں اور بے سہارا لوگوں کی مدد کریں اور عید کے اس پر مسرت موقع پر انکو اپنی خوشیوں میں شامل کریں۔ انہوں نے ملک کو ترقی اور خوشحالی کی راہ پر گامزن کرنے کے لیے جذبہ ابراھیمی پر عمل پیرا ہونے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی معاشی ترقی اور خوشحالی موجودہ پارلیمان کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمیں پاکستان کی ترقی اور خوشحالی کی خاطر آپس کے سیاسی اختلافات کو بھلا کر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ حج اور عید الاضحی کے اجتماعات سے ہمیں سبق ملتا ہے کہ ہم ایک دوسرے کے ساتھ حسن سلوک، بھائی چارے اور رواداری سے رہیں تاکہ ہمارا آپس میں بھائی چارہ اور یگانگت قائم ہو سکے۔ انہوں نے عیدالاضحی کے موقع پر پوری امت مسلمہ کی یکجہتی اور اتحاد کے لیے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ 

اسپیکر نے فلسطین اور مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے انسانیت سوز مظالم اور جارحیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ آج جو ظلم و ستم فلسطین کے معصوم اور بے گناہ مسلمانوں پر ڈھایا جارہا ہے اس کی عصر حاضر میں کوئی مثال نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ غزہ اور رفع میں اسرائیلی فورسز کے ہاتھوں تقریباً 40 ہزار افراد کو قتل کیا گیا جن میں ہزاروں شیر خوار بچے، عورتیں اور بزرگ شامل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسرائیل کی جانب سے فلسطینی عوام کے ساتھ ظلم اور زیادتیوں کے دلخراش مناظر نا پہلے کسی نے دیکھے ہیں اور نا ہی رہتی دنیا تک اس کی کوئی مثال ملے گی۔ انہوں نے کہا کہ فلسطین میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں پر اقوام عالم کی خاموشی لمحہ فکریہ ہے۔فلسطین میں معصوم بچوں، عورتوں اور بزرگوں کو جس بے دردی سے قتل کیا گیا ہے وہ  انسانی حقوق کی عالمی تنظیم کے منہ پر تماچہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ سلامتی کونسل کی غزہ اور رفع میں جنگ بندی کے حق میں منظور قراردادوں کے باوجود صیہونی فورسز کی غزہ اور رفع میں جارحیت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی حیثیت کو چیلنج کرنے کے مترادف ہے۔  

اسپیکر نے مزید کہا کہ کشمیر کی وادی میں کشمیری عوام کو بھارتی فورسز کی جانب سے بدترین مظالم کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی فورسز کے ہاتھ وادی کشمیر کے معصوم بچوں، بھائیوں اور بہنوں کے خون سے رنگے ہوئے ہیں۔ انہوں نے مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھارتی آئین میں حاصل جغرافیائی حیثیت کو تبدیل کر کے کشمیری عوام کو اپنی شناخت سے محروم کرنا عالمی قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سب اللہ تعالیٰ کے حضور دست دعا ہیں کہ فلسطیی اور کشمیری عوام کو ان کی آزادی کا حق ملے تاکہ وہ ایک آزاد، خود مختار اور زندہ قوموں کی طرح ترقی اور خوشحالی کی دوڑ میں آگے بڑھ سکیں۔ انہوں نے عید الاضحی کے موقع پر پوری قوم اور امت مسلمہ کو فلسطین اور کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کی آزادی کیلئے خصوصی دعاؤں کا اہتمام کرنے کی تلقین کی۔ 

اس موقع پر ڈپٹی اسپیکر سید میر غلام مصطفیٰ شاہ نے کہا کہ عید الاضحی ہمیں حضرت ابراہمھیم  علیہ السلام کی دین اسلام کی خاطر دی گئی عظیم قربانی کی یاد دلاتی ہے جنہوں نے اللہ تعالیٰ کی خوشنودی کی خاطر اپنے پیارے بیٹے حضرت اسماعیل علیہ السلام کو اللہ کی رضا کی خاطر قربان کرنے کا ارادہ کیا۔ انہوں نے عید الاضحی کی خوشیوں میں غرباء اور مساکین کو برابر کا شریک کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے عید کے موقع پر فلسطین اور کشمیر کی عوام پر انسانیت سوز مظالم کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ فلسطین میں صہیونی فورسز کی جانب سے گزشتہ 9 ماہ سے جاری قتل عام دنیا کے جدید اصولوں کے منافی ہے۔ انہوں نےکہا کہ پاکستان کی پارلیمان اور عوام فلسطینی عوام کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان فلسطینی اور کشمیری عوام کے بنیادی حق، حق خودارادیت کی مکمل حمایت کرتا ہے اور کشمیر اور فلسطین کا مقدمہ تمام علاقائی و عالمی فورمز پر کشمیر اور فلسطین کی آزادی تک لڑتا رہے گا۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ وہ دن دور نہیں جب فلسطین اور کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہوگا اور کشمیری اور فلسطینی عوام آزادی کے ساتھ اپنی زندگیاں گزاریں گے۔