Accessibility

Accessibility

Website Zoom

Color/Contrast

Download Reader

| Today In National Assembly: 11:00 AM: National Assembly Session |
Print Print

NA Speaker Emphasizes Eliminating Child Labour Key to Ensure Bright Future of Children

Tuesday, 11th June, 2024

Islamabad, June 11, 2024; Honorable Speaker National Assembly of Pakistan Sardar Ayaz Sadiq has said that child labour is absolutely unacceptable in all of its form and its manifestation.Children are the future of this country and no one can be allowed to deprive them of their potential, dignity and rights. Parliament of Pakistan is committed to eradicate child labour. He also said that eliminating child labour is key to ensure the bright future of children. He expressed these views on the eve of ‘World Day Against Child Labour’, which is observed on 12th June 2024.

The Speaker in his message underscored that child labour is a serious social challenge. It is hurting the physical, mental and emotional growth of millions of children globally, who are unfortunately involved in the child labour.

The Speaker, further, emphasized the need for enhanced investment in education, social protection programs, and child protective services. He also stressed the importance of raising awareness about the issue and engaging civil society, parents, children, and the larger public to eliminate child labour along with all its forms once and for all.

Honourable Speaker National Assembly of Pakistan Sardar Ayaz Sadiq commended the efforts of all stakeholders working tirelessly to combat child labour and to promote children's rights. He urged all stakeholders to continue their efforts and work in consensus to eradicate child labour.

On this occasion, Deputy Speaker National Assembly Syed Mir Ghulam Mustafa Shah has also said that child labour is a serious social issue that needs to be addressed urgently. He emphasized that children should be given access to quality education and a safe environment, rather than being forced into forced labour. He also stressed that the government, civil society, and individuals must join hands to eliminate child labour and ensure that every child has access to their fundamental rights.



 چائلڈ لیبر کا خاتمہ بچوں کے روشن مستقبل کو یقینی بنانے کے لئے ناگزیر ہے ، اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد : 11 جون 2024:اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ چائلڈ لیبر کسی بھی صورت میں قابل قبول نہیں ہے۔ بچے اس ملک کا مستقبل ہیں اور کسی کو بھی ان کی صلاحیت، وقار اور حقوق سے محروم کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔ پاکستان کی پارلیمنٹ بچوں کی مزدوری کے خاتمے کے لئے پرعزم ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ بچوں کی مزدوری کا خاتمہ ان کے روشن مستقبل کو یقینی بنانے کے لئے ناگزیر ہے۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار چائلڈ لیبر کے خاتمے کے عالمی دن کے موقع پر کیا، جو ہر سال 12 جون کو منایا جاتا ہے۔

اسپیکر نے اپنے پیغام میں اس بات کی نشاندہی کی کہ چائلڈ لیبر ایک سنگین مسئلہ ہے جو عالمی سطح پر لاکھوں بچوں کی جسمانی اور ذہنی نشوونما کو نقصان پہنچا رہا ہے۔ انہوں نے تعلیم، سماجی تحفظ کے پروگراموں، اور بچوں کے لئے حفاظتی اقدامات میں سرمایہ کاری کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے چائلڈ لیبر کے بارے میں سول سوسائٹی، والدین اور اساتذہ کو عوام میں شعور اجاگر کرنے کی اہمیت پر بھی زور دیا۔ اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے بچوں کی مزدوری کی روک تھام اور بچوں کے حقوق کے فروغ کے لئے انتھک محنت کرنے والے تمام اسٹیک ہولڈرز کی کوششوں کی تعریف کی۔ انہوں نے تمام اسٹیک ہولڈرز پر زور دیا کہ وہ اپنی کوششیں جاری رکھیں اور بچوں کی مشقت کے خاتمے کے لئے اتفاق رائے سے کام کریں۔

اس موقع پر، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی سید میر غلام مصطفی شاہ نے کہا کہ چائلڈ لیبر ایک سنگین معاشرتی مسئلہ ہے جس پر فوری توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ بچوں کو جبری مزدوری پر مجبور کرنے کے بجائے معیاری تعلیم اور محفوظ ماحول تک رسائی دی جانی چاہئے۔ انہوں نے یہ بھی زور دیا کہ حکومت اور سول سوسائٹی کو بچوں کی مزدوری کو ختم کرنے اور بچوں کو بنیادی حقوق کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے سخت اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے ۔