Accessibility

Accessibility

Website Zoom

Color/Contrast

Download Reader

The National Assembly Session has been prorogued on Friday, the 17th May, 2024
Print Print

Ensuring implementation of public friendly budget; a catalyst for development of country says NA Deputy Speaker, Budget is a reflection of nation's priorities, aspirations, and commitments to citizens, Syed Mir Ghulam Mustafa Shah

Tuesday, 14th May, 2024




Islamabad: 14th May 2024; Deputy Speaker National Assembly Syed Mir Ghulam Mustafa Shah has said that budget is not just a financial document; it's a reflection of nation's priorities, aspirations, and commitments to  citizens. He also added that ensuring utmost efficiency, transparency, and effectiveness in its formulation and executions would create inclusivity." He expressed these views while addressing the seminar on "Empowering Parliamentarians for Effective Budgetary Oversight" organized by Pakistan Institute of Legislative Development and Transparency (PILDAT) in Islamabad today.

While highlighting the significance of enhancing Parliamentary process for budget formation, Deputy Speaker stressed to ensure that resources are utilized efficiently and effectively to achieve the desired outcomes which needs robust mechanisms for monitoring and evaluation, as well as greater accountability at all levels of Government.

He also added, "budget serves as a financial roadmap, outlining expenditures and income for a defined period, typically a fiscal year."
He also said that, "Addressing deficiencies in Pakistan's Parliamentary budget process is essential to foster transparency, accountability and efficient resource allocation." He also emphasized to empower Parliamentary committees, adopting pre and post budget scrutiny measures.


 
ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی کا 'سالانہ وفاقی بجٹ اور ترقیاتی پروگرام کی موثر نگرانی' کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب

بجٹ صرف مالیاتی دستاویز نہیں بلکہ قوم کی ترجیحات، امنگوں اور عوام کے ساتھ کیے گئے وعدوں کا عکاس ہے، ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد: 14 مئی 2024
ڈپٹی سپیکر قومی اسمبلی سید میر غلام مصطفیٰ شاہ نے کہا ہے کہ عوام دوست بجٹ پر عمل درآمد کو یقینی بنانا اور ترقیاتی ہداف کو حاصل کرنا موجودہ پارلیمان کی اولین ترجیح ہو گی۔ بجٹ صرف مالیاتی دستاویز نہیں بلکہ یہ قوم کی ترجیحات، امنگوں اور عوام کے ساتھ کیے گئے وعدوں کا عکاس ہے۔ بجٹ ایک مالیاتی روڈ میپ کے طور پر کام کرتا ہے اور ایک مقررہ مدت کے لیے اخراجات اور آمدنی کا تعین کرتا ہے۔ بجٹ کی تشکیل اور عملدرآمد میں کارکردگی، مہارت اور شفافیت کو یقینی بنانا عوام کے منتخب نمائندوں کی ترجیح ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے آج اسلام آباد میں پاکستان انسٹیٹیوٹ آف لیجسلیٹو ڈویلپمنٹ اینڈ ٹرانسپیرنسی (پلڈاٹ) کے زیرِ اہتمام ’’سالانہ وفاقی بجٹ اور ترقیاتی پروگرام کی موثر نگرانی" کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی نے  بجٹ کی تشکیل کے لیے پارلیمانی عمل کو بڑھانے کی اہمیت کو اجاگر کیا۔ انہوں نے کہا کہ بجٹ کے مطلوبہ مقاصد کے حصول کے لیے  موجودہ وسائل کو مؤثر طریقے سے استعمال کیا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں  مضبوط میکانزم کے ساتھ ساتھ حکومتی سطح پر احتساب کی بھی ضرورت ہے۔ انہوں نے پاکستان کے پارلیمانی بجٹ کی تشکیل کے عمل میں خامیوں کو دور کرنے، شفافیت کو یقینی بنانے، احتساب اور وسائل کی مؤثر تقسیم کو فروغ دینے کی ضرورت پر زور دیا۔ انہوں نے پارلیمانی کمیٹیوں کو با اختیار بنانے اور بجٹ سے پہلے ضروری اقدامات کرنے اور جانچ پڑتال کی ضرورت پر زور دیا۔