Accessibility

Accessibility

Website Zoom

Color/Contrast

Download Reader

The Sitting of the National Assembly has been adjourned to meet again on Thursday, the 20th June, 2024, at 5:00 p.m.
Print Print

Speaker National Assembly Sardar Ayaz Sadiq Meets Saudi Ambassador; Reaffirms Resolve To Further Deepen Fraternal Pak-Saudi Ties

Tuesday, 23rd April, 2024

Islamabad: 23rd April 2024; Speaker National Assembly Sardar Ayaz Sadiq has stated that Pakistan attaches great importance to its long-standing brotherly relations with Saudi Arabia. He added, "Pak-Saudi relations are bound by an unbreakable bond of religion, culture, history, and mutual trust and respect." He also expressed, "The continuous upward trajectory of our bilateral ties is extremely heartening, and we are committed to taking this mutually beneficial partnership to new heights by expanding cooperation in all fields of mutual interest." The Speaker made these remarks during a meeting with the Saudi Ambassador in Pakistan, Nawal bin Saeed Ahmad Al-Malkiy who called on him at Parliament today.

The Speaker highlighted that the people of Pakistan hold deep respect and affinity for Saudi Arabia, the Custodian of the Two Holy Mosques, His Majesty King Salman bin Abdul AI, His Royal Highness Crown Prince Mohammad Bin Salman, and the people of the Kingdom. "Both brotherly countries share the unanimity of views on important global and regional issues," he added.

Referring to parliament-to-parliament relations, the Speaker emphasized that parliamentary diplomacy is of utmost importance to strengthen bilateral relations. Exchanges of parliamentary delegations and coordination among  parliamentary friendship groups will help bring the two nations closer. During the meeting,he also mentioned the invitation extended to the Chairman of Majlis-e-Shura of the Kingdom of Saudi Arabia to visit Pakistan.

The Speaker of the National Assembly, while commenting on the rich history of mutual cooperation, highlighted that the two Islamic brotherly countries have always supported each other in difficult times. He said, "Saudi Arabia's support for the economic development of Pakistan is commendable." While welcoming Saudi Arabia's commitment to invest in Pakistan, the Speaker remarked that there are ample opportunities for foreign investment in Pakistan, and current economic policies are very conducive for investment.

The Speaker National Assembly also thanked the Saudi government for providing facilities and support to the Pakistani diaspora living in Saudi Arabia.

The Saudi Ambassador expressed gratitude to the Speaker of the National Assembly for his gracious remarks on Pak-Saudi ties, expressing best wishes for the custodians of the Holy Haram and the desire to expand bilateral relations. The Ambassador, further, reaffirmed that Saudi Arabia attaches great importance to its brotherly relations with Pakistan, and both the people and government of Saudi Arabia will continue to lend support for the sustainable development and prosperity of Pakistan.

اسپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق سے سعودی عرب کے سفیر کی ملاقات

 ملاقات میں پاکستان اور سعودی عرب کے مابین موجود دیرینہ اور برادرانہ تعلقات کو مزید وسعت دینے کے عزم کا اعادہ

 اسلام آباد: 23 اپریل 2024؛  سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے کہا ہے کہ پاکستان سعودی عرب کے ساتھ اپنے دیرینہ برادرانہ تعلقات کو بہت اہمیت دیتا ہے۔انہوں نے کہا کہ پاک-سعودی عرب تعلقات مذہب، ثقافت، تاریخ اور باہمی اعتماد اور احترام کے اٹوٹ رشتوں میں بندھے ہوئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ دوطرفہ تعلقات ہر گزرتے دن کے ساتھ مزید مضبوط سے مضبوط تر ہوتے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت سعودی عرب کے ساتھ سماجی و اقتصادی شعبوں میں تعاون اور شراکت داری کو وسعت دینے کے لیے پر عزم ہے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار پاکستان میں سعودی عرب کے سفیر نواف بن سعید احمد المالکی سے ہونے والی ملاقات میں گفتگو کرتے ہوئے کیا، جہنوں نے منگل کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں اسپیکر قومی اسمبلی سے ملاقات کی۔

اسپیکر نے مزید کہا کہ پاکستان کی عوام خادمین الحرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز، ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان اور مملکت سعودی عربیہ کے عوام کے لیے گہری وابستگی اور بے فناہ احترام  رکھتے ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ دونوں برادر ممالک اہم عالمی اور علاقائی مسائل پر متفقہ موقف رکھتے ہیں اور دونوں ممالک کی خوشیاں اور دکھ درد مشترکہ ہیں۔انہوں نے پارلیمانی سطح پر دوطرفہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ دوطرفہ تعلقات کو مضبوط بنانے کے لیے پارلیمانی سفارت کاری انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ پارلیمانی وفود کے تبادلے اور پارلیمانی دوستی گروپوں کے درمیان رابطوں سے دونوں  ممالک کی عوام کو قریب لانے میں مدد ملے گی۔

 اسپیکر قومی اسمبلی نے باہمی تعاون کے فروغ کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ دونوں برادر اسلامی ممالک نے ہمیشہ مشکل وقت میں ایک دوسرے کا ساتھ دیا ہے۔انہوں نے پاکستان کی معاشی ترقی کے لیے سعودی عرب کی حمایت اور تعاون کو قابل تحسین قرار دیا اور پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے سعودی عرب کے عزم کا خیر مقدم کیا۔اسپیکر نے کہا کہ پاکستان میں اقتصادی شعبوں میں غیر ملکی سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں جس سے سعودی عرب کے سرمایہ کار استفادہ کر سکتے ہیں۔انہوں نے سعودی عرب میں مقیم پاکستانیوں کو سہولیات اور تعاون فراہم کرنے پر سعودی حکومت کا شکریہ ادا کیا۔اسپیکر نے سفیر کو بتایا کہ پاکستان کی قومی اسمبلی کی جانب سے سعودی عرب کے مجلس شوریٰ کے چیئرمین کو پارلیمانی وفد کے ہمراہ پاکستان کے دورے کا دعوت نامہ ارسال کر دیا گیا ہے۔

 سعودی عرب کے سفیر نواف بن سعید احمد الملکی نے پاکستان سعودی عرب کے دوطرفہ تعلقات کو وسعت دینے، خادم الحرمین الشریفین کے لیے نیک خواہشات کے اظہار پر اسپیکر قومی اسمبلی کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کے ساتھ تعلقات کو فروغ دینا سعودی عرب کی خارجہ پالیسی کا اہم جزو ہے۔انہوں نے کہا کہ سعودی عرب کے عوام اور حکومت پاکستان کو ترقی یافتہ اور خوشحال پاکستان دیکھنے کے خواہش مند ہیں اور اس سلسلے میں سعودی عرب کی حکومت کی جانب سے ہر ممکن تعاون جاری رکھا جائے گا۔