Last Updated On: 3rd June 2020, 02:08 PM
Home | Feedback | Advertisments | Careers | Downloads | Useful Links | FAQs | Contact Us 
The National Assembly has been summoned to meet on Friday, the 5th June, 2020 at 4:00 p.m. in the Parliament House, Islamabad|

Press Release Details

Share Print
There will be no law that goes against the freedom of the media: Speaker National Assembly
Thursday, 19th September, 2019

کوئی ایسا قانون نہیں بنے گا جو میڈیا کی آزادی کے خلاف ہو:اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد؛ 19 ستمبر ، 2019:اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ صحافیوں کے حقوق کے تحفظ کے لئے ان کے ساتھ ہوں۔ کوئی ایسا قانون نہیں بنے گا جو میڈیا کی آزادی کے خلاف ہو۔انہوں نے کہا کہ میڈیا ٹربیونل بنانے کے لیے میڈیا کے نمائندوں کے ساتھ مشاورت کی جائے گی اور متعلقہ قائمہ کمیٹی میں میڈیا کی طرف سے نامزد کیے گئے نمائندوں کو مشاورت کے لیے مدعو کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ میڈیا کی ترجیحات کو مد نظر رکھ کر قانون سازی کی جائے گی۔ انہوں نے ان خیالات کا اظہار پارلیمانی رپورٹرز ایسوسی ایشن کی تقریب حلف برداری سے جمعرات کے روز پارلیمنٹ ہاؤس میں خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر وزیر اعظم کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان بھی موجود تھیں۔

                اسپیکر نے کہا کہ ملکی تاریخ اس بات کی گواہ ہے کہ 1947 سے آج تک ہم حالت جنگ میں ہیں ۔ ہمیں نئے چیلنجز کا سامنا رہتا ہے جس کا اثر  ہماری معیشت پر پڑتا ہے اور وہ مسلسل دباؤ میں رہتی ہے۔ انہوں نے کہاکہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں ہماری معیشت بلکہ ہر شعبہ ہائے زندگی کو بری طرح متاثر کیاہے۔ انہوں نے کہا کہ جس شعبے سے میرا تعلق ہے اس کا ہر گھر دہشت گردی کے ناسور کی وجہ سے متاثر ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جمہوری طور پر ہم ایک ارتکائی دور سے گزر رہے ہیں ملک میں جمہوری ادارے مستحکم ہو رہے ہیں اور اگر یہ کوئی سوچتا ہے کہ جمہوریت کو خطرہ ہے تو یہ اس کی اپنی سوچ ہے  حقیقت سے اس کا کوئی تعلق نہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو پرفارم نہیں کرے گا عوام اس کا احتساب کریں گے اور وہ دوبارہ منتخب نہیں ہو پائے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کو حقیقی جمہوری ملک بنائیں گے ۔ انہوں نے کہا کہ تمام پارٹیوں کے اندربھی جمہوریت ہونی چاہیے اور انٹر پارٹی الیکشن ہونے چاہییں  اور عام ورکر  کو حق ہونا چاہیے کہ وہ اپنی لیڈرشپ کو منتخب کرسکے۔

 

قبل ازیں اسپیکر نے پارلیمانی رپورٹرز ایسوسی ایشن کے نو منتخب عہدیداران اور گورننگ باڈی کے ممبران سے حلف لیا۔ تقریب حلف برداری سے معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان ، پی آر اے کی نو منتخب صدر بہزاد سلیمی اور سیکرٹری جنرل ایم بی سومرونے بھی خطاب کیا اور میڈیا کے نمائندوں کو درپیش مسائل کو حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔ وزیر اعظم کی معاون خصوصی براے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان نے پی آر اے کے نو منتخب عہداران اور میڈیا کے نمائندوں کو میڈیا کو درپیش مسائل کو حل کرنے کا یقین دلایا۔